کیمرے میں قید ہوئی گھنونی حرکت!

0
885

اس ویڈیو کو دیکھ کر کہیں تندوری روٹی سے یقین ہی نہ اٹھ جائے، دیکھیں کیسے کیمرے میں قید ہوئی گھنونی حرکت
دراصل وائرل ویڈیو میں یہ شخص روٹی پکاتے ہوئے نظر آرہا ہے اور اس کے پاس دو دیگر نوجوان بھی رہتے ہیں۔ اس دوران وہ شخص روٹی میں تھوکتا ہے اور پھر اسے تندور میں پکانے کے لیے ڈال دیتا ہے۔

لکھنؤ: اترپردیش میں تھوک کر روٹی بنانے کا ایک اور ویڈیو وائرل ہوا ہے۔ میرٹھ کے بعد اب راجدھانی لکھنؤ میں تھوک کر روٹی بنانے کا ویڈیو منظر عام پر آیا ہے جس میں ایک شخص ڈھابے پر تھوک کر تندور میں روٹی پکاتا ہوا نظر آرہا ہے۔ اس شخص کی یہ حرکت کسی نے کیمرے میں قید کر کے وائرل کر دی۔ موبائل فون سے ریکارڈ کی گئی اس ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ کس طرح تھوک کر روٹی (Spitting on Bread) بنائی جا رہی ہے۔ تاہم اب معاملہ پولیس تک پہنچ گیا ہے۔

دراصل تھوک کر روٹی بنانے کا یہ ویڈیو کاکوری کے امام علی ہوٹل کا بتایا جا رہا ہے۔ اس ویڈیو میں ایک شخص تندور میں تھوکتے اور روٹی پکاتے ہوئے نظر آ رہا ہے۔ اس ویڈیو پر پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے کاکوری پولیس نے ہوٹل کے مالک یعقوب اور اس کے چار ملازمین کو حراست میں لے لیا ہے۔ فی الحال پولس وائرل ویڈیو کے معاملے میں پوچھ گچھ کر رہی ہے۔

ویڈیو میں کیا ہے
دراصل وائرل ویڈیو میں یہ شخص روٹی پکاتے ہوئے نظر آرہا ہے اور اس کے پاس دو دیگر نوجوان بھی رہتے ہیں۔ اس دوران وہ شخص روٹی میں تھوکتا ہے اور پھر اسے تندور میں پکانے کے لیے ڈال دیتا ہے۔ یہ ویڈیو دور سے کسی نے چپکے سے کیمرے میں قید کر لی ہے جس کی وجہ سے یہ زیادہ صاف نہیں ہے لیکن یہ ضرور نظر آ رہا ہے کہ روٹی میں تھوکا جا رہا ہے۔

بتا دیں کہ اس سے پہلے اتر پردیش میں ہی میرٹھ میں منگنی کی تقریب کے دوران تھوک کر روٹی بنانے کا ویڈیو وائرل ہوا تھا۔ گزشتہ سال دسمبر کے مہینے میں میرٹھ کے تھانہ کنکرکھیڑا علاقے میں منگنی کی تقریب میں تندور کاریگر نوشاد کو تھوک کر روٹی بناتے دیکھا گیا تھا۔ اس واقعے کے بعد اسے گرفتار کر لیا گیا۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ اس سے پہلے بھی کئی ویڈیوز منظر عام پر آچکے ہیں۔

Previous articleقرضہ نہ دینے پر بینک میں ہی لگا دی گئی آگ
Next articleسوامی کے بعد BJP کو ایک اور بڑا جھٹکا

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here