نتیش کابینہ کا بڑا فیصلہ ،بہار کے ا سکولوں میں 45852 عہدوں پر بحال ہوں گے اساتذہ ،سولر لائٹ سے روشن ہوں گی گاؤں کی گلیاں ،کابینہ کی میٹنگ میں 17 ایجنٹوں کو ملی منظوری

0
233

(Nitish Cabinet Decisions:)

پٹنہ 7ستمبر( بلاغ18ڈاٹ کام) وزیراعلی کی صدارت میں منعقد ہوئی کابینہ کی میٹنگ میں آج کئی اہم فیصلے کیے گئے کابینہ کی میٹنگ میں کل 17 ایجنڈوں پر مہر لگی پنچایتی راج اور بلدیاتی اداروں کے تحت پرائمری ٹیچر ٹاؤن پرائمری ٹیچر کے بیسک زمرے کو منظور 40518 عہدوں کو متبدل کرتے ہوئے محکمہ تعلیم کے زیر کنٹرول گورنمنٹ پرائمری اسکولوں میں ہیڈ ماسٹر کے عہدے کی توضیع کو منظوری دی گئی ہے۔پنچایتوں میں سکینڈری اسکول اور ہائر سکینڈری اسکولوں میں ہیڈ ماسٹرکے 5334 عہدوں کی توضیع منظوری دی گئی ہے ماڈل سنٹرل جیل بیور اور ڈویژنل جیل حاجی پور میں پائلٹ پروجیکٹ کے طور پر موبائل فون جیمر لگانے کو بھی منظوری دی گئی ہے ۔بہار انڈسٹری سیکورٹی فورس وضع کردہ عہدوں کی باز نامزدگی کی تجویز کو منظوری دی گئی ہے بہار چھواقانون 1947 کی دفعہ 8 کے تحت ریاست میں پیدا ہونے والے چھوا کی قیمت کے تعین کو بھی منظوری دی گئی ہے. بہار میں آن لائن خدمات کے تحت ای پیمائش کے نفاذ کے لیے سبھی534 سرکل 101 سب ڈویژن اور سبھی 38ضلعوں کے لیے 711 ای پی ایس مشین خریدنے کے لئے42 کروڑ 86 لاکھ روپے کو منظوری دی گئی ہے ۔کابینہ نے وزیر اعلی دیہی سولر اسٹریٹ لائٹ منصوبے کو بھی منظوری دی گئی ہے بہار پنچایت انتخاب میں ای وی ایم کے لیے کے پنک پیپر سیل کی چھپائی سرسوتی پریس کولکاتا سے نامزدگی کی بنیاد پر کرائے جانے کو بھی منظوری دی گئی ہے۔

آریہ بھٹ نالج یونیورسٹی کے احاطہ میں قائم 7 تعلیمی مراکز کو آریہ بھٹ نالج یونیورسٹی کے ساتھ ضم کر دینے کو منظوری دی گئی ہے بجلی کمپنیوں کے ذریعے انرجی بقایہ کے مد میں ادائیگی کے لئے قرض لینے کو منظوری دی گئی ہے بہار ریاستی صنعتی ترقیاتی کمیشن کو بہار ایمرجنسی فنڈ سے 20 کروڑ پیشگی اور اس کے مساوی رقم مشروط قلیل مدتی قرض کی شکل میں ادا کرنے کو منظوری دی گئی ہے بہار زرعی یونیورسٹی اور اس کے ملحقہ کالجوں اور تحقیقی اداروں میں کام کرنے والے سبکدوش اساتذہ سائنسدانوں کے لیے ایک جنوری 2016 کے اثر سے نظر ثانی شدہ شرح تنخواہ کو بھی منظوری دی گئی ہے۔15 مالیاتی کمیشن کی سفارش کی روشنی میں مالی سال21 -2021 میں مرکزی حکومت سے ملنے والے گرانٹ کی پہلی قسط کے کل سات ارب 41 کروڑ 80 لاکھ روپے کی رقم کو تین سطحی پنچایتی راج اداروں کے درمیان تقسیم اور خرچ کرنے کو منظوری دی گئی ہے۔

Previous articleجھارکھنڈاسمبلی میں نمازکے لیے جگہ خاص کیے جانے پر سیاست تیز، بہار اور یوپی میں بھی پوجاکے لیے کیا جانے لگا جگہ کامطالبہ!
Next articleاُردو ادبِ اطفال کی موجودہ صورت حال عالمی ادبِ اطفال کے تناظر میں از: امام الدین امامؔ

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here