مغرب کی وادیوں میں گونجی اذاں ہماری

0
175

تحریر۔محمدتوحیدرضاعلیمی بنگلور 9886402786

صدائےاذان سےساراعالم معطرہوتاہے فضاء میں اللہ اکبر کی صدائیں گونجتی ہیں صدائےاذان سے شیطان پیٹھ پھیرکربھاگتاہے صدائےاذان سےشیطان کوتکلیف ہوتی ہے اذان کی ابتداء۔ارشادِباری تعالیٰ ہے۔جب تم نمازکااعلان کرتےہووہ تمسخرکرتےہیں اس لئےکہ وہ نادان لوگ ہیں اور فرمانِ الٰہی ہے۔جب جمعہ کے دن نماز کی اذان دی جائے۔اور بخاری شریف کتاب الاذان میں حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالی عنہ روایت کرتےہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نےفرمایاجب نمازکےلیے اذان دی جاتی ہےتوشیطان پیٹھ پھیرکربھاگتاہےاور پادتاہواجاتاہےتاکہ اذان کی آواز نہ سنےجب اذان ختم ہوتی ہےتوواپس آجاتاہےتاآنکہ جب اقامت کہی جاتی ہے تو پھربھاگ جاتاہےجب اقامت ختم ہوجاتی ہےتوپھر واپس آجاتاہےتاکہ آدمی کےدل میں وساوس پیداکرے کہ فلاں بات یادکرو فلاں بات یادکرو وہ باتیں جواسےیاد نہیں ہوتی اسےیاد دلاتاہے یہاں تک کہ آدمی کوپتہ نہیں چلتاکہ کتنی نمازپڑھی۔اذان دینےکےلیےقرعہ ڈالنا۔ کہاجاتاہےکہ کچھ لوگوں نےاذان کےلیے جھگڑاکیاتوسعد رضی اللہ تعالی عنہ نے ان کےدرمیان قرعہ اندازی کی۔ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ روایت کرتےہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نےفرمایااگرلوگوں کوپتہ ہوکہ اذان (کہنے)اوراگلی صف میں شامل ہونےکاکس قدرثواب ہے اور یہ(چیز) بغیرقرعہ کےحاصل نہ ہوتوضرورقرعہ اندازی کریں اگریہ علم ہوکہ اس وقت نمازپڑھنےکاکتنا ثواب ہےتو خاص اہتمام سےآئیں اگرانہیں معلوم ہوصبح اورعشاء (باجماعت)پڑھنےپرکتنااجرہےتوضروران دونوں میں حاضرہوں خواہ گھٹنوں کےبل چل کرآناپڑے۔اذان کی بڑی فضیلت احادیث میں موجودہے۔

موجودہ دورمیں لاؤڈاسپیکرسےصدائےاذان کوبندکرنےکی ناپاک کوشش جاری ہےہم مسلمانوں کاعقیدہ یہی ہےکہ صدائےاذان صبح قیامت تک پوری دنیامیں گونجتی رہےگی فضاصدائے اذان سےمعطرہوتی رہےگی چاہےظاہری آلات موجودہوں یانہ ہوں لیکن مساجدمیں اذان ہوتی رہےگی ایمان والاکبھی اپنےایمان کاسودانہیں کرسکتاچاہےحالات کیسےبھی ہوں مگرحالات کامقابلہ حکمتِ عملی دانائی سمجھ بوجھ دُور اندیشی اورقرآن واحادیث کی روشنی میں ضرورکرے گالیکن اپناایمان نہیں بیچےگااپنے ایمان کوبچانےکی فکرساری زندگی رہتی ہےکہ کہیں بےخبری میں ہماراایمان ضائع نہ ہوجائےجیسے قرآن مجیدسورۃ الحجرات آیت نمبر 2 میں اللہ پاک نے ارشادفرمایا۔اے ایمان والواپنی آوازیں اونچی نہ کرونبی کی آوازپر اور ان کےحضور بات چلاکرنہ کہو جیسے آپس میں ایک دوسرے کے سامنےچلاتےہوکہ کہیں تمہارے عمل اکارت نہ ہوجائیں اور تمہیں خبرنہ ہو۔پھرسورہ بقرہ آیت نمبر 208 پارہ نمبر 2میں ارشادفرمایا۔اے ایمان والو اسلام میں پورے داخل ہوجاؤ اورشیطان کےقدموں پرنہ چلووہ تمہاراکُھلادشمن ہے۔اورقرآن پاک میں جابجاایمان رکھنےاورایمان کی حفاظت کاحکم دیاگیاہےاور مومن خاتمہ بالخیرکےلیےدعائیں بھی کرتاہے یادرکھیں ساری دنیامل کربھی سچےپکےمومنِ کامل کے ایمان کوخریدنہیں سکتی اس لئےکہ ایمان بیچنے والی چیزنہیں ہے اسی لیےصحابہ کرام نےاورہمارےاسلاف نےبڑی اذیتوں کےباوجوداپنے ایمان کاسودانہیں کیاآج حجاب۔نقاب۔
چادرپوشی۔اورحلال ذبیحہ۔تجارت۔ اب اذان پر بحث چھڑی ہوئی ہے کہ کئی مساجدمیں اذان کی آواز دھیمی کی گئی ہے اور وائس کنٹرول کرنے کے لیے ایک ڈیوائس تیار کیا گیاہے اسے نصب کرلیں تو آواز کنٹرول میں رہے گی اور ملک عزیز کی کئی ریاستوں کی حکومتوں نےجوہدایات سب کے لیےپیش کی ہیں اس پر عمل پیرا ہوکر اذاں دیں اور مسلمان دستورِہندکا پاس ولحاظ رکھتاہے اورقانون کےدائرے میں رہ کر اپنےمسائل کاحل بھی نکالنے کی کوشش کرتاہے یقینًاہرمعاملے میں علماء قرآن واحادیث کی روشنی میں مسلمانوں کی صحیح رہنمائی کر رہےہیں اکثر ین آر سی ین پی آر کے بعدسے نئے نئے مسائل میں علماءحالات حاضرہ کےمطابق قرآن و حدیث کی روشنی میں فیصلے صادرفرمارہےہیں اور اپنی ذمہ داری بخوبی انجام دیتے ہوئے خدمت دین وخدمت خلق کے فرائض انجام دے رہے ہیں اگرکہیں مساجد سے اذان کی آواز کانون سےنہ ٹکرائےتو ہم مساجدسےدورنہ ہوجائیں کہ ہمیں آذان کی آوازسنائی نہیں دی یہ بہانہ کھلائےگا مساجدمیں پنج وقتہ نمازوں کاوقت معلوم کرلیں پھر اذان کی آوازکانوں سے ٹکرائے نہ ٹکرائےبرابراوقات الصلاۃ (نمازکےوقت) میں مساجدمیں حاضرہوجائیں اوراپنےرب کےحضورسجدہ ریزہوجائیں۔جہاں کہیں بھی رہیں نمازمعاف نہیں کوئی بہاناقابلِ قبول نہیں اورہمیں نماز پڑھنے اوراذان دینےپرپابندی نہیں ہے مساجد میں نماز پنج گانہ کے لیے اذان ہوتی ہے اس سے پہلےلاؤڈ اسپیکرپرختم سحری کااعلان اورافطاری کابرابراعلان ہوتارہا گھرہویادُکان بازارہویاگلی سحری افطاری کرنے والوں کےلئے آسانی تھی لیکن اب نہ ہونےکی صورت میں جہاں کہیں بھی رہیں وہیں کےوقت کےمطابق سحری وافطاری کریں۔ شرپسندعناصرکی دھمکیوں سےنہ ڈریں بلکہ اللہ رب العزت سےڈریں وہی ہماراحامی وناصروحقیقی مددگارہے ہمارے نبی حضرت محمدمصطفی صلی اللہ علیہ وسلم نےارشادفرمایاکہ کوئی خداسےڈرے تمام مخلوق اس سےڈرے گی اورجوشخص خداسےنہیں ڈرے گاتو اللہ تعالیٰ تمام مخلوق کاڈراس کےدل میں ڈال دے گااور فرمایاکہ تم میں سے سب سے عقلمندوہ ہے جس میں خداترسی سب سےزیادہ ہو اورسورہ توبہ آیت نمبر 119 پارہ 11 میں اللہ پاک نے ارشادفرمایا اے ایمان والو اللہ سےڈرو اورسچوں کےساتھ ہو جاؤ۔اورجابجااللہ سےڈرنےکاحکم قرآن مجیدمیں موجودہے۔ اللہ پاک ملک میں امن و عافیت وسلامتی کےساتھ ترقی عطاکرے آمین

مغرب کی وادیوں میں گونجی اذاں ہماری
تھمتانہ تھا کسی سے سیل رواں ہمارا (ڈاکٹر اقبال)

خطیب مسجدرحیمیہ میسور روڈ جدیدقبرستان مہتمم دارالعلوم حضرت نظام الدین رحمۃ اللہ علیہ امام مسجد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم و نوری فائونڈیشن بنگلور کرناٹک انڈیا

Previous articleعلامہ راشد برہان پوری حیات و خدمات آن لائن توسیعی خطبہ
Next articleغالب کا “سلام”

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here