شعبۂ اردو بنارس ہندو یونیورسٹی میں پی جی ڈپلومہ اِن ٹرانسلیشن اینڈ ماس میڈیاکی شروعات

1
85

شعبۂ اردوکا یہ کورس اردو کے طلبہ کے لیے روزگار کے نئے دروازے کھولے گا۔ پروفیسر آفتاب احمد آفاقی

شعبۂ اردو بنارس ہندو یونیورسٹی کے تعلیمی سال 2021-22سے ایک نئے اسپیشل کورس ”پی جی ڈپلومہ اِن ٹرانسلیشن اینڈ ماس میڈیا“ کا آغازہورہا ہے، جس کا اشتہار بنارس ہندویونیورسٹی کی ویب سائٹ http://bhuonline.in/ پر موجود ہے۔ سائنس اور ٹکنالوجی کے اس دور میں اردو زبان وادب کے طالب علموں کو روزگار کا مسئلہ درپیش ہے۔ عہد جدیدکے تقاضوں اور ملازمت کے امکانات کی پیش نظر شعبۂ اردو نے سال رواں سے متذکرہ پیشہ وارانہ کورس کی شروعات کی ہے۔ دو سمسٹر پر مشتمل اس کورس کی معیاد ایک برس کی ہوگی اور فی سمسٹر7500روپے ادا کرنے ہوں گے۔اس کورس میں زیادہ سے زیادہ تیس طالب علم داخلہ لے سکیں گے۔ شعبے نے اس خصوصی کورس کے لیے ماس کمیونیکیشن سے وابستہ ماہرین کی خدمات حاصل کرنے کی غرض سے ایک پینل تیار کیا ہے، جس میں بنارس ہندویونیورسٹی، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، جواہرلال نہرویونیورسٹی اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اساتذہ شامل ہیں۔

شعبۂ اردو نے اس کے نصاب کی تیاری اس نہج پہ کرائی ہے کہ طالب علم نہ صرف ذرائع ابلاغ کے جدید اصول اور تقاضوں سے واقف ہوں گے بلکہ عملی طورپرنٹ میڈیا، الیکٹرانک میڈیا اور سوشل میڈیا میں استعمال ہونے والی تکنیک سے بھی بخوبی واقف ہوں گے۔اس کورس میں ترجمے کو ترجیحی طور پر شامل کیا گیا ہے۔ موجودہ عہد میں مختلف زبانوں سے ترجمے کے میدان میں جو امکانات ہیں وہ اہل نظر سے پوشدہ نہیں۔ اسی مقصد کے تحت ترجمے کے نظری وعملی دونوں سطح پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔
پروفیسرآفتاب احمدآفاقی(صدر شعبہئ اردو بنارس ہندویونیورسٹی) نے کہا کہ امید کی جاتی کہ یہ کورس اردو کے طلبہ کے لیے روزگار کے نئے دروازے کھولے گا۔

اس کورس میں داخلے کے لیے آن لائن فارم بھرنے کی آخری تاریخ20ستمبر2021ہے۔بنارس ہندویونیورسٹی کی سائٹ http://bhuonline.in/ پر جاکر ڈپلومہ\سرٹیفیکٹ پروگرام پر کلک کریں۔

Previous articleفانی بدایونی ایک تعارف از: سید نوید جعفری حیدرآباد دکن
Next articleجو کرے اتحاد کی بات: پوچھو اس سے مسلک کیا ہے!!از:جاوید اختر بھارتی

1 COMMENT

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here