دہلی سمیت اترپردیش میں مسلسل بارش، اسکول بند،ریڈ الرٹ جاری

0
14

نئی دہلی (ایجنسی ):دہلی سمیت اترپردیش میں مسلسل ہورہی بارش سے حالات تشویشناک ہیں ۔ اترپردیش کے کئی اضلاع میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 100 ملی میٹر سے زیادہ بارش ہوچکی ہے ۔ اگلے کچھ گھنٹوں تک ایسے حالات بنے رہنے کا اندیشہ ہے ۔ وہیں دہلی میں بھی جمعرات دو پہر تک 1159.4 ملی میٹر بارش درج کی گئی ہے ، جو 1964 کے بعد سے سب سے زیادہ اور اب تک کی تیسری سب سے زیادہ بارش ہے ۔اترپردیش میں بارش اور اس سے وابستہ واقعات میں اب تک سات لوگ جان گنوا چکے ہیں ۔ اس کے ساتھ ہی رائے بریلی میں 24 گھنٹے میں 186 ملی میٹر بارش ہونے کے بعد اسکولوں میں دو دن کی چھٹی کردی گئی ہے ۔ نیز ریاست کے کئی حصوں میں بھاری بارش کی وجہ سے بجلی سپلائی بھی متاثر رہی ۔ کئی علاقوں میں ریلوے ٹریک ڈوب گئے ہیں اور سڑکوں پر پانی بھر جانے کے بعد انڈرپاس کو بھی بند کردیا گیا ہے ۔وہیں قومی راجدھانی دہلی کی بات کی جائے تو دہلی میں ستمبر میں ہوئی بارش نے چار سو ملی میٹر کے نشان کو پورا کرلیا ہے ۔ جمعرات دوپہر تک ہوئی 403 ملی میٹر بارش ستمبر 1944 میں 417.3 ملی ملیٹر بارش کے بعد اس مہینے میں ہوئی سب سے زیادہ بارش ہے ۔

اترپردیش کے جون پور کے سجان پورہ میں بھاری بارش کی وجہ سے دیوار منہدم ہوجانے سے تین لوگوں کی موت ہوگئی ہے ۔ وہیں بارہ بنکی کے رام سنیہی گھاٹ علاقہ میں بھی ایسے ہی ایک واقعہ میں دو لوگوں کی موت ہوگئی ۔ اس کے علاوہ کوشانبی ، ایودھیا اور سیتا پور میں بھی بارش کی وجہ سے پیش آئے واقعات میں لوگوں کے مرنے کی خبریں ملی ہیں ۔ حالانکہ اموات کی تعداد کی فی الحال جانکاری نہیں مل سکی ہے ۔محکمہ موسمیات نے اگلے 48 گھنٹوں کیلئے لکھنو ، غازی آباد ، بارہ بنکی ، سلطان پور ، متھرا ، سیتا پور، ایودھیا ، مراد آباد ، شاملی ، وارانسی ، سنبھل ، بلند شہر ، بجنور ، امروہہ ، گورکھپور ، مظفر نگر ، سہارنپور اور پریاگ راج سمیت اترپردیش کے 30 اضلاع میں بھاری بارش کا الرٹ جاری کیا ہے ۔

Previous articleراہل گاندھی سے ملاقات کرچکے کنہیا کمار جلد ہی ہوں گے کانگریس میں شامل
Next articleحکومت بہار: محکمہ اقلیتی فلاح: وظیفہ کا اعلان 22-2021

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here