تمام اسکول بند، سرکاری ملازمین گھر سے کام کریں گے!

0
1258

دہلی 13 نومبر (یو این آئی) دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ ریاست میں بڑھتی ہوئی آلودگی سے نمٹنے کے لیے تمام اسکول ایک ہفتہ تک بند رہیں گے اور تمام سرکاری دفاتر کے ملازمین گھر سے کام کریں گے۔

مسٹر کیجریوال نے بڑھتی ہوئی آلودگی کے پیش نظر آج اپنے وزراء اور افسران کے ساتھ ہنگامی میٹنگ کی۔ اجلاس میں چار اہم فیصلے کیے گئے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ دہلی کے تمام اسکول ایک ہفتے کے لیے بند رہیں گے اور تمام سرکاری دفاتر میں گھر سے کام جاری رہے گا۔ سرکاری دفاتر کے ملازمین ہنگامی کال پر دستیاب ہوں گے۔ گھر سے کام کرنے کے لیے پرائیویٹ دفاتر کو بھی ایڈوائزری بھیجی جائے گی۔ نیز 14 سے 17 نومبر کے درمیان تمام تعمیراتی سرگرمیاں بند رہیں گی۔ انہوں نے کہا کہ آلودگی کی وجہ سے حالات خراب ہونے پر دہلی میں لاک ڈاؤن لگایا جا سکتا ہے۔ ابھی اس کی تجویز سپریم کورٹ کے سامنے رکھی جائے گی۔ وزیراعلیٰ نے واضح کیا کہ ہم ابھی لاک ڈاؤن نہیں لگا رہے ہیں۔ اگر حالات مزید خراب ہوئے تو مرکزی حکومت سمیت تمام ایجنسیوں کو اعتماد میں لے کر ہی یہ سخت قدم اٹھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ دہلی میں گزشتہ چند دنوں سے آلودگی میں کافی اضافہ ہوا ہے۔ ایئر انڈیکس کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ 30 ستمبر تک دہلی کی ہوا تقریباً صاف تھی۔ ایئر انڈیکس 100 سے نیچے تھا جسے تسلی بخش حد سمجھا جاتا ہے۔ تب سے دہلی میں آلودگی کی سطح مسلسل بڑھ رہی ہے۔ دہلی کے آس پاس کی ریاستوں میں کسان مجبور ہوکر پرالی جلارہا ہے اور اس کا دھواں دہلی میں آرہا ہے جس کی وجہ سے آلودگی بڑھ رہی ہے۔ یہ ایک دوسرے پر انگلیاں اٹھانے کا وقت نہیں ہے اور ہمارا وہ مقصد بھی نہیں ہے۔ اس وقت دہلی میں آلودگی بڑھنے سے ایمرجنسی جیسی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ اس سے کیسے نمٹا جائے اور دہلی کے لوگوں کو کیسے راحت پہنچائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ آج ہم نے اس سلسلے میں دہلی سکریٹریٹ میں ایک ہنگامی میٹنگ کی۔ میٹنگ میں چار اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔

Previous articleقاضی القضاۃ شیخ علی بخش کی عدالت میں ۔ از : مفتی محمد خالد حسین نیموی قاسمی
Next articleمولانا محمد حنیف قاسمی ؒ از: مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here