تحفظ قرآن کا بہترین ذریعہ حفظ قرآن ہے : مولانا شجاع الدین مظاہری

0
217

دھن گھٹا ( سنت کبیر نگر)

( عقیل احمد خان)) جوشخص قرآن کریم پڑھے اور پھر اس کے احکام سیکھے نیز اس پر عمل بھی کرے تو اللہ تعالی اس کے والدین کو نور کا تاج پہنائے گا، اس کی روشنی سورج جیسی سے زیادہ چمکدار ہو گی، اس کے والدین کو ایسے لباس پہنائے جائیں گے کہ پوری دنیا بھی اس کے برابر نہ پہنچ سکے گی، تو والدین کہیں گےپروردگاریہ ہمیں کس کے عوض پہنایا گیا تو انہیں کہا جائے گاتمہارے بچوں کے قرآن سیکھنے کی وجہ سے مذکورہ باتیں تحصیل دھن گھٹا حلقہ واقع مدرسہ عربیہ معراج العلوم چھتہی پوکھرہ ،باغ والی مسجد میں منعقدہ دستار بندی کے موضوع پر اجلاس عام سے اپنے خطاب کے دوران مولانا شجاع الدین مظاہری نے کی،

مولانامصلح الدین قاسمی استاذ دارالعلوم دیوبند نے کہا کہ ایک حافظ جس کو ﷲتعالیٰ ایک سال،ڈیڑھ سال،دوسال، ڈھائی یا تین سال کی محنت پرحفظ کی سعادت نصیب فرماتا ہے ،اس کوپھر یہ شرف حاصل ہو جاتا ہے کہ یہ دس بندوں کی سفارش کرسکتا ہے،اور اس کی عزت کی وجہ سے ﷲتعالیٰ اس کے والدین کی بھی اس طرح عزت فرماتا ہے، کہ اُن کے سرپرتاج رکھاجاتاہے جس کی روشنی سورج کی روشنی سے زیادہ ہوتی ہے،

انہوں نے کہا کہ قرآن مقدس سے کتنوں کے مقام ومرتبہ کو اللہ بلند فرماتے ہیں،اور اس پر عمل نہ کرنے کی وجہ سے ذلت و پستی میں ڈال دیتے ہیں،اس موقع پر مدرسہ معراجِ العلوم سے فارغ ہونے والے حافظ محمد طہ، حافظ عبد الرحیم،حافظ ثناء اللہ،حافظ ضیاء اللہ،حافظ احسان اللہ،حافظ محمد عالم
حافظ روشاد،حافظ محمد آصف،حافظ محمد عرفان،حافظ محمد شہباز،حافظ محمد سیف،حافظ محمد ریحان، حافظ محمد اسعد ،
، سمیت کل تیرہ بچوں کو علمائے کرام کے ہاتھوں دستار فضیلت سے نوازا گیا اس موقع پر مولانا محمد ابرار حلیمی مہتمم مدرسہ معراجِ العلوم چھتہی مولانا محمد مستقیم قاسمی بلرامپوری،مفتی محبوب احمد قاسمی،مولانا حسان احمد ندوی ناظم مدرسہ عربیہ مصباح العلوم جامع مسجد مہولی،مولانا طاہر ابرار حلیمی، نمائندہ عقیل احمد خان ،قاری آس محمد،حافظ نثار احمد،حافظ نعمان احمد عزیزی
مولانا شجاع الدین مظاہری مہتمم مدرسہ عربیہ بستان العلوم پولی ، ،مولانا منصور احمد،مہتمم مدرسہ مصباح العلوم روضہ،
، حافظ عبد الرشید، قاری عبد الوھاب،مولانا طاہر ابرار صدیقی منیجر ایچ ایم گرین سٹی،
ابولوفا خان ،مولانا عمار،

قاری نفیس احمد، قاری محمدساجد، قاری آس محمد، رفیع اللہ خان،
حاجی عزیز اللہ، سمیت کثیر تعداد میں سامعین شریک اجلاس تھے۔

Previous articleجلسہ دستار بندی و تقریب انعامات
Next articleانقلابی شاعر حبیب جالب

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here