ایک دل دہلانے والی ویڈ یوآئی سامنے۔ محبت کے نام پر دو مسلم لڑکیوں پر کیا گیاتشدد، از : م۔ج۔ن

0
326

یہ ایک دل دہلانے والی ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں دو مسلم لڑکیوں کو پر تشدد کیا گیا ہے، واقعہ یہ ہے کہ دو ہندو لڑکے محبت کے نام پر بہلا پھسلا کر ان لڑکیوں کو گھر سے لے گئے، گھر سے لے جانے کے بعد انکے ساتھ جنسی زیادتی کی پھر موت کے گھاٹ اتارنے کی کوشش کی جیسا کہ تمام واقعات میں ہوتا ہے۔

روز مرہ ایسے سنسنی خیز واقعات پیش آرہے ہیں، سوشل میڈیا اور الیکٹرانک میڈیا پر کھل کر اس پر بات ہورہی ہے، خوب سمجھایا جارہا ہے کہ یہ محبت نہیں بلکہ ایک منصوبہ بند سازش ہے۔۔۔۔ لیکن ان سب کے باوجود بھی یہ حقیقت مسلم لڑکیوں کے سمجھ میں نہیں آرہی ہے، وہ یہ سمجھتیں ہیں کہ میرا والا ایسا نہیں ہے، وہ ایسا نہیں کرسکتا،، کیا انہیں معلوم نہیں ہے کہ یہ سب ایک ہی مذہب و قوم سے تعلق رکھتے ہیں، ایک ہی طرح کی فطرت اور ذہنیت کے حامل ہیں، انکا ایک ہی مقصد ہوتا ہے۔۔۔ کہ مسلم لڑکیوں کو محبت کے جال میں پھنساؤ پھر استعمال کرو اور چھوڑ دو یا ماردو،،
لیکن مسلم لڑکیاں اس سازش کو سمجھنے کے لیے تیار نہیں ہیں، اور نہ یہ حقیقت انکے والدین سمجھنے کو تیار ہیں، جب تک خود انکے ساتھ یہ معاملہ پیش نہیں آجاتا اس وقت تک یہی سمجھتے ہیں کہ ہماری بیٹی ایسا نہیں کرسکتی،

اس لیے مجھے سب سے زیادہ شکایت ان والدین سے ہے جو آنکھیں بند کرکے اپنی لڑکیوں پر بھروسہ کرتے ہیں، وقت پر انکی شادی نہیں کرتے ہیں، اور بلا ضرورت موبائل فونز استعمال کرنے کی اجازت دیتے ہیں، خصوصاً وہ والدین جنہیں معلوم ہوتاہے کہ انکی لڑکی غلط راستہ پر ہے اسکے بعد بھی نہ اسکی شادی کرتے ہیں اور نہ اس پر کڑی نظر رکھتے ہیں،
میں جب اس طرح کی ویڈیوز یا خبریں دیکھتا ہوں تو بہت تکلیف ہوتی ہے اور غصہ بھی آتا ہے، کبھی کبھی سوچتا ہوں کہ انکے ساتھ جو ہو رہا ہے وہ سہی ہے، انکے کرتوتوں کی سزا ہے،
ایسے واقعات کیوں ہوتے ہیں اسکے کچھ اسباب ہیں۔۔۔ ۱۔ لڑکیوں کے پاس موبائل فونز، ۲۔ وقت پر انکی شادی نہ کرنا، ۳۔ لڑکیوں پر اندھا اعتماد، ۴۔ والدین کی غفلت و لاپرواہی، ۵۔ اور بنیادی وجہ صحیح تعلیم و تربیت کا فقدان،
یقینا آپ کی لڑکی غلط نہیں ہے لیکن اس وقت حالات بہت خطرناک ہیں، باطل پوری طرح کمر بستہ ہے، ذراسی غفلت ہماری عزت خاک میں ملاسکتی ہے، اس لیے ہر وقت چوکنا رہیں اور اپنی بہن بیٹیوں پر انکے نیک ہونے کے باوجود کڑی نظر رکھیں، انہیں موبائل بالکل نہ دیں یہ سب سے بڑا ناسور ہے، بوقت ضرورت استعمال کے لئے اپنا موبائل دیں، الگ سے کوئی موبائل نہ دیں اور گھر پر جو موبائل ہو لڑکیوں کو اس سے ہاتھ لگانے کی بھی اجازت نہیں ہونا چاہیے، خود اپنی بہن بیٹیوں کی حفاظت کریں،
یہ سب ہماری غفلت ولاپرواہی کا نتیجہ ہے،
https://www.facebook.com/112015621083953/posts/112038111081704/?sfnsn=wiwspmo

Previous articleنجیب کیلانی کی کتاب”فارس ھوازن” از: اظہارالحق قاسمی بستوی
Next article3 ارب 60 کروڑ کا بجٹ ملا: مدارس میں۔ سائنس سماجی سائنس اور زبان کے استاد ہوں گے بحال!

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here