اردو ٹی ای ٹی کے مسئلے پر ایم ۔ایل ۔اے اظہار عالم سے ملاقات

0
142

گزشتہ سات سالوں سے در در کی ٹھوکر کھا رہے امیدواروں نے کشنگنج کے ایم۔ایل ۔اے سے ملاقات کیا اور اپنا درد سنایا وفد میں شامل آل بہار اردو بنگلہ ٹی ای ٹی کے ریاستی صدر مفتی حسن رضا امجدی۔سید عزیزالحسن ۔ قیام الدین اور حافظ انصار تھے ۔

کانگریس پارٹی کے ایم ۔ایل ۔اے اظہار عالم نے باتوں کو تفصیل سے سُنتے ہوۓ کہا کہ ہم اسمبلی میں ضرور آواز اُٹھاٸینگے اور اس مسٸلہ پر وزیر اشوک کمار چودھری کے ساتھ وزیراعلی سے ملے گیں یونیین کے صدر مفتی حسن رضا امجدی نے کہا کہ ایس ٹی ای ٹی ہندی میں دس فیصد کی چھوٹ دینے کی کیا مجبوری تھی۔اور اردو ٹی ای ٹی امیدواروں کی چھوٹ نہیں دینے کی کیا مجبوری ہے?جب پورے بھارت میں کٹ آف مارکس کم کیا گیا یہاں تک کہ بہار ہندی ٹی ای ٹی میں کٹ آف مارکس کم ہوا تو اردو tet میں کٹ آف مارکس کم کرکے رزلٹ کیوں نہیں? جب محکمہ تعلیم نے سپریم کورٹ کے سرکاری وکیل سے اوپینیین منگوالیا۔جو امیدواروں کے حق میں آیا۔محکمہ تعلیم نے اوپینیین پر کارواٸ کرتے ہوۓ لیٹر نکالاکہ اردو ٹی ای ٹی امدواروں کے رزلٹ میں پانچ فیصد کم کرکے رزلٹ جاری کرنے میں کتنے امیدوار پاس ہونگیں۔یہ ڈاٸریکٹر بہار بورڈ کو لکھا۔

اس پر بھی ابھی تک کوٸ کارواٸ نہیں ہوٸ ۔ساتھ ہی ساتھ محکمہ تعلیم نے بہار بورڈ کو یہ بھی لکھا کہ اردو اساتذہ کی سیٹیں پہلے ہی سے پندرہ ہزار خالی ہیں۔اب اسی سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ بارہ ہزار اردو ٹی ای ٹی امیدواروں کے سا تھ حکومت کتنا ظلم کررہی ہے۔امیدوار موت کو گلے لگا رہے ہیں۔انصاف کے انتظارمیں عمر ختم ہورہی ہے۔اب فیصلہ مسلم ایم۔ایل۔اے۔مسلم رہنما اور تنظیموں کی عدالت میں ہے۔

Previous articleمولانا ابوالکلام آزاد ہندو مسلم اتحاد کے سب سے بڑے علمبردار رہے۔خواجہ محمد اکرام الدین
Next articleڈمپل یادو کے بیان پر سی ایم یوگی کا حوابی حملہ، کہا:مولویوں کے دربار میں ناک رگڑنے والےبھگوا کی قیمت نہیں سمجھ پائیں گے

اپنے خیالات کا اظہار کریں

Please enter your comment!
Please enter your name here